چرس استعمال میں کراچی دنیا کا دوسرا بڑا شہر بن گیا

پاکستان کا سب سے بڑا شہر کراچی دنیا میں سب سے زیادہ چرس استعمال کرنے والے شہروں کی فہرست میں دوسرے نمبر پر آ گیا ہے۔ اس فہرست میں امریکہ کا شہر نیو یارک پہلے نمبر پر ہے۔

جرمن کمپنی اے بی سی ڈی کی تحقیق کے مطابق نیو یارک میں سالانہ 77 ٹن سے زائد چرس استعمال کی جاتی ہے جبکہ دوسرے نمبر پر کراچی آتا ہے جہاں 42 ٹن چرس پھونکی جاتی ہے۔ انڈین دارالحکومت نئی دہلی میں 38 ٹن سے زائد چرس پی جاتی ہے۔

بین الاقوامی سروے کے ادارے نے دنیا بھر میں بھنگ کے استعمال، اس کی قانونی حیثیت اور مختلف شہروں میں قیمت کے حوالے سے سروے کے نتائج شائع کیے ہیں۔

 

فوٹو: ڈی ڈبلیو

اس سروے میں 120 ممالک سے معلومات اکٹھی کی گئیں جس کے مطابق سال 2018 میں سب سے زیادہ بھنگ امریکی شہر نیویارک میں استعمال کی گئی جس کا تخمینہ 77.44 میٹرک ٹن ہے۔
دوسری جانب نیویارک، نئی دہلی، ممبئی، شکاگو، ماسکو اور کینیڈا کے شہر ٹورنٹو میں اس کے استعمال کی جزوی طور اجازت ہے۔ اس فہرست میں صرف ایک شہر لاس اینجلس ایسا ہے جہاں چرس کا استعمال مکمل طور پر قانونی حیثیت رکھتا ہے۔

رپورٹ میں چرس کی کھپت پر ٹیکس لگا کر آمدن حاصل کرنے کا بھی حوالہ دیا گیا ہے۔
رپورٹ کے مطابق اگر پاکستان صرف اپنے مقبول برانڈز کے سگریٹ پر نافذ ٹیکس کی شرح سے چرس پر بھی ٹیکس نافذ کر دے تو اس کو سالانہ ساڑھے 13 کروڑ ڈالرز سے زائد آمدن ہو سکتی ہے۔
اس فہرست میں کراچی دوسرے نمبر پر ہے جہاں 41.95 میٹرک ٹن یعنی 41 ہزار 950 کلوگرام بھنگ استعمال کی گئی۔

بھارتی دارالحکومت نئی دہلی ، امریکی شہر لاس اینجلس، مصر کا دارالحکومت قاہرہ اور بھارتی شہر ممبئی بالترتیب تیسرے، چوتھے، پانچویں اور چھٹے نمبر ہیں۔

تا ہم کراچی، قاہرہ اور لندن کے علاوہ باقی تمام ممالک میں بھنگ پر جزوی پابندی ہے ، پابندی کے باوجود بھنگ کے استعمال میں کراچی کا دنیا میں دوسرے نمبر پر آنا متعلقہ اداروں اور حکام کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.