امریکہ اور طالبان کے درمیان مذاکرات کے نویں دور کا آغاز

ا مریکہ اور طالبان کے درمیان مذاکرات کے نویں دور کا آغاز دوحاقطر میں شروع ہوگیا۔ فریقین کے درمیان معاہدے کے حوالے سےبات چیت چاراہم نکات پر ہورہی ہے۔ جس میں طالبان کی طرف سےغیر ملکی شدت پسندوں کو افغان سرزمین کسی دوسرے ملک کے خلاف استعمال نہ کرنے کی ضمانت دینا ہو گی۔ دیگر نکات میں افغانستان سے امریکی اور نیٹو فورسسز کا مکمل انخلا ۔۔افغانوں کے درمیان مذاکرات اور جنگ بندی شامل ہیں۔ افغانستان میں تقریبا بیس ہزارغیر ملکی فوجی موجود ہیں جن میں زیادہ تعداد امریکی فوجیوں کی ہے۔
افغان صدر اشرف غنی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ طالبان کے ساتھ امن مذاکرات میں افغان حکومت کی شمولیت ناگزیر ہے۔ تاکہ امن عمل اگلے مرحلے میں داخل ہوسکے-

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.