طالبان کا افغانستان کے بڑے شہر قندوز پر حملہ، افغان فورسز کے 8 اہلکار ہلاک

افغان طالبان نے افغانستان کے شہر قندوز پر حملہ کردیا جس کے بعد افغان سیکیورٹی فورسز اور جنگجوؤں میں شدید جھڑپوں کا سلسلہ جاری ہے۔

افغان طالبان کی جانب سے ایک طرف امریکا سے مذاکرات کا سلسلہ جاری ہے تو وہیں دوسری طرف افغانستان میں تابڑ توڑ حملے کیے جارہے ہیں۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق افغان طالبان نے شمالی افغانستان کے شہر قندوز پر درمیانی شب کئی اطراف سے حملہ کیا اور کئی عمارتوں پر قبضہ کرلیا ہے۔

طالبان اور سیکیورٹی فورسز کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ جاری ہے جس میں سیکیورٹی فورسز کی معاونت افغان فضائیہ بھی کررہی ہے۔

افغان میڈیا کے مطابق طالبان نے 8 اہلکاروں کو یرغمال بنا لیا ہے، حملے میں 3 سیکیورٹی اہلکار ہلاک اور 11 زخمی ہوئے ہیں۔

یاد رہے کچھ روز قبل افغانستان میں شدت پسندوں نے افغان سیکیورٹی فورسز کی چیک پوسٹ پر حملہ کرکے کم از کم 14 سرکاری اہلکاروں کو ہلاک اور متعدد کو زخمی کردیا تھا۔ سرکاری اہلکاروں کا تعلق افغان ملیشیا سے بتایا جاتا ہے۔

خبررساں ادارے نے ہیرات حکام کے حوالے سے بتایا ہے کہ شدت پسندوں نے رباط سنگی میں سیکیورٹی چیک پوسٹ پر حملہ کیا تھا۔ اس حملے کے بعد ہونے والی لڑائی میں ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

افغان حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ سرکاری سیکیورٹی فورسز نے علاقے پہ اپنا کنٹرول برقرار رکھا ہوا ہے اور ہونے والی لڑائی کے بعد حملہ آور فرار ہو گئے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.